Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Mohabbat Sehmi Hui Si Hai by Nagina Basharat

Mohabbat Sehmi Hui Si Hai by Nagina Basharat

Urdu poetry is an ancient tradition. It has many different types. It is considered as an important element of our culture. It is a best way to express feelings of love, pain,anxiety and suffocation.
A poet interprets his inner feelings and condition through his words.

محبت سہمی ہوی سی ہے

 میرے اندر بہت اندر
سمندر  در سمندر ہیں
کئ ساحل۔۔جزیرے ییں۔
رسیلی گوندھ  مٹی ہے۔۔
ہوا میں راگ خوش رنگ ییں
کئ ہیریں پنپتی ہے۔
سبھی مجنوں کھنکتے ہیں۔
سبھی لیلہٰ و سَسی کی
سداییں یاد مجھ کو ہیں۔

میرے اندر کی بستی میں
دھمالے عشق بجتی ہے
کھڑے پاوں پہ گُھنگروں سَنگ
مجاور ذات رقصاں  ہے

محبت کے سبھی جذبے
عشق کے ق میں گُم ہیں۔

میرے اندر چمن بھی ہیں
گُلوں کے سنگ َپون بھی ہے۔
میرے ساحل کی مٹی پر
چمکتا  چاند رُوشن ہے
گھروندے ریت کے بھی ہیں
کتابِ گلُ بھی مجھ میں ہے
مگر
    پھر بھی !!
        مگر پھر بھی

میری ظاہر سی ہستی میں
     محبت کے سبھی جذبے     
بے حد سہمے ہوئے سے ہے

 ازقلم نگینہ بشارت

Post a comment

0 Comments