Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Khudgarz Rishton ke Naam by Maryam Ashiq

Khudgarz Rishton ke Naam by Maryam Ashiq

Khudgarz Rishton ke Naam by Maryam Ashiq

Urdu poetry is an ancient tradition. It has many different types. It is considered as an important element of our culture. It is a best way to express feelings of love, pain,anxiety and suffocation.
A poet interprets his inner feelings and condition through his words.
خود غرض رشتوں کے نام

زندگی اک گمنام موڑ پہ رکی ہے

خودغرض رشتوں کے بھنور میں پھنسی ہے

چہرے تو جانے پہچانے ہیں،لہجے مگر انجانے ہیں

مسکراہٹیں ابھی بھی چہروں پہ طاری ہیں

دل ان کے مگر احساس سے عاری ہیں

ہم نے تو محبت سے رشتوں کے باغ کو سینچا ہے

نہ جانے پھر کس کوتاہی کا یہ نتیجہ ہے

اک اور آزمائیش سر پہ کھڑی ہے

مگر سامنے رشتوں کی لڑی ہے

رائیٹر مریم عاشق

Post a comment

0 Comments