Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Jeet Kar Bazi Ishq Ko Kese Haara Jaye by Hira Ramzan

Jeet Kar Bazi Ishq Ko Kese Haara Jaye by Hira Ramzan

Jeet Kar Bazi Ishq Ko Kese Haara Jaye by Hira Ramzan

Welcome To All Writers,Test your writing abilities.
Kitab Nagri start a journey for all social media writers to publish their writes.
Urdu poetry is an ancient tradition. It has many different types. It is considered as an important element of our culture. It is a best way to express feelings of love, pain,anxiety and suffocation.
A poet interprets his inner feelings and condition through his words.

غزل
جیت کر بازئ  عشق کو کیسے ہارا جائے
بن تیری یوں جیسے جینے کا سہارا جائے
ہم تو مقتل میں بھی دوڑے آئیں سر کے بل
شرط یہ ہے کہ ہمیں محبت سے پکارا جائے
خودداری پامال ہو کے رہ  جاتی ہے
نہ دشمن کے سامنے چاک دامن پسارا جائے
روح کی دراڑیں ہیں آتی جاتی سانسوں کا  تماشا ہے
ہم کو  یوں نہ زندان ہجر سے گزارا جائے
زندگی کی موت، گردش دوراں کی ہیں عنایتیں
کیا ضروری ہے کہ  مجھے ہجر کی چھلنی سے نتھارا جائے
خالص ہی کیجیے بے شک نفرت ہی کیجیے
مجھےکو اب کے   نہ  دل لگی  سے مارا جائے
خوش مزاج سے چہرے پر بے حد اداس سی آنکھیں ہیں
محبت سے میرے خال و خد کواب کے  مکمل سنوارا جائے
میری حرماں نصیبی کا یہ عالم ہے کہ مجھ کو  حرا
بیچ سمندر میں ڈبو کر دسترس سے دورکنارہ جائے

حرا رمضان ۔رینالہ خورد




Post a comment

0 Comments