Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Raah E Yaar Jab Mile Glimpse Of New Episode

Raah E Yaar Jab Mile Glimpse Of New Episode

Raah E Yaar Jab Mile Glimpse Of New Episode

" کیا کرے گے آپ... بتائیے.... میرے بچوں کی زندگی خراب کر دی... آپ کو لگتا ہے یہ سب آرام سے سہہ لوں گی.... نہیں... میں اسیرہ کو جان سے مار دوں گی آج...." وہ خطرناک عزائم لیے انتہائی طیش میں مڑیں تھیں۔

"میں تمہیں طلاق دے کر اس گھر سے نکال دوں گا.... اور فرزام سمیت باقی بچوں کو جائیداد سے عاق کر دوں گا.... سڑکوں پر آ جاؤ گے تم لوگ.... بلکل ترس نہیں کھاؤں گا....

اگر تم نے میری بیٹی کی زندگی برباد کرنے کی کوشش کی تو میں اپنے الفاظ پر پورا اترنے میں وقت نہیں لگاؤں گا.... آزما کر دیکھنا چاہتی ہو تو مرضی ہے تمہاری.... " حامد بخت کی بات سے ان کے قدم رکے تھے۔انھوں نے بے یقینی سے مڑ کر حامد بخت کو دیکھا کیا یہ وہی انسان ہے جو ان کے اور ان کی اولاد کے لیے فرشتہ تھا۔جس کی بے پایاں محبت میں ایک عمر گزری تھی۔

"آج وہ لڑکی ہم سب سے اہم ہو گئی.... جس کے وجود تک سے آپ ساری زندگی غافل رہے... آج وہ اتنی عزیز ہو گئی کے اس کے لیے آپ سب کچھ فراموش کر رہے ہیں.... مجھے میرے بچوں کو کس بات کی سزا دے رہیں ہیں آپ...." سلیمہ بیگم نے زخمی نگاہوں سے اپنے سامنے کھڑے حامد بخت کو دیکھا۔کب سوچا تھا کہ یہ انسان اتنا بدل جائے گا۔


Post a Comment

0 Comments