Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

The Mystery Of Dark Love Romantic Novel By Uzma Mujahid Episode 14


"اوکے آئی ایم ڈن۔"

دامیر کا اعتراف منہم کے پاؤں جکڑ گیا تھا کہیں نا کہیں یہ دوسری بار ہوا تھا کہ دامیر علوی نے اسکا یقین توڑا تھا۔وہ پیچھے کو پلٹی تھی وہیں دامیر چونکا تھا اس سے پہلے کے وہ آگے بڑھتا منہم نے اسکی ضد میں قدم پیچھے بڑھا دیے تھے وہ جانتی ہی نہیں تھی کہ اسکے پلٹنے سے اگلا قدم سیدھا پول میں گیا تھا اور وہ ان بیلنس سی پانی میں گری تھی۔دامیر نے ایک غصے بھری نگاہ اس پہ ڈالنے کے بعد دوسری نگاہ نہیں ڈالی تھی پر چند پل میں پانی سے آتی آوازوں نے اسے منہم سے زیادہ دیر لاپرواہی نہیں برتنے دی تھی اگلا لمحہ قیامت تھا جب اس پہ انکشاف ہوا تھا وہ دس فٹ گہرے پول میں سرئیواول کیلئے ہاتھ پیر چلارہی تھی اسے سویمنگ نہیں آتی تھی ۔

"من۔۔۔"اگلے لمحے وہ پول میں کودا تھا اور اسے جالیا ۔اسے بانہوں کے گھیرے باہر لایا تھا ناک اور منہ میں پانی بھرنے سے وہ بری طرح چکرا کے رہ گئی تھی وہیں بری طرح سے کھانستے ہوئے دکھائی دی تھی۔

"بکواس کروا لو جتنی مرضی مگر آواز دیتے ایگو پرابلم آرہی تھی اگر میں غصے سے واک آؤٹ کرجاتا تو پتا بھی ہے کیا ہوتا؟"

وہ اس پہ چڑھ دوڑا تھا۔

منہم کو کھانسنے سے فرصت نہیں تھی تبھی دامیر نے اسکے لبوں پہ استحقاق بھرے انداز میں اپنے لب جمائے تھے اور اسکی سانس کی بحالی کیلئے اپنی کچھ سانسیں اسے مستعار کی تھیں


Post a Comment

0 Comments