Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Mohlat

Mohlat

Mohlat

"مہلت"


زندگی ختم ہوئی۔۔۔۔۔۔
دردوں سے نجات کی طلب تھی۔۔۔۔
ملنے کو ہے چھٹکارا۔۔۔۔۔پھر کیا ہے ایسا جو اذیت دیتا۔۔۔۔
تمہیں تو مرنا تھا نا؟؟؟
اب۔ کیوں ایسے بیٹھی ہو؟؟؟مراد بر آئی ہے نا تمہاری۔۔۔۔۔
دیکھو اب تو موت تم پہ مہرباں ہونے کو ہے۔۔۔۔
لیکن۔۔۔۔۔۔۔
لیکن کیا؟؟؟؟
مجھے جو حصار چاہئیے تھا نہ؟؟؟؟
لاکھوں جیسا ایک شخص۔۔۔۔۔۔۔وہ جو جسم کا نہیں روح کا ہمزاد ہو۔۔۔۔
وہ جس کے سینے پہ سر رکھ کے مجھے۔۔۔۔۔درد،اذیت،روگ سب بھول جائیں۔۔۔۔
وہ محافظ کے جس کے حصار میں موت کے سوا کوئی مجھ تک نا پہنچ پائے۔۔۔۔۔
وہ جو بچپن سے آج تک کی ساری خلشیں دور کر دے۔۔۔۔
وہ جو محرومیوں کا ازالہ کرے۔۔۔۔۔
وہ جس کے لیے میں ضد نہیں۔۔۔۔۔اعزاز ہوں۔۔۔۔
وہ کہ جب اس کی پناہ میں ہوں۔۔۔۔تو کوئی خوف نا ہو۔۔۔۔
میرا محرم بنے وہ۔۔۔۔۔وقت تہجد جب میں نماز پڑھ کے سلام پھیروں تو اس کا چہرہ میرے سامنے ہو۔۔۔۔
جسے میں آیتوں اور سورتوں کے حصار میں قید کروں۔۔۔۔۔
نماز فجر میں اس سے تھوڑا پیچھے جائے بچھا کر۔۔۔۔مقتدی بن کے کھڑی ہو سکوں۔۔۔۔
جب وقت نزاع آئے تو میرا سر اس کی گود میں ہو۔۔۔۔
وہ کہ جس سے مجھے دفنانے کی اجازت طلب کی جائے۔۔۔۔
مجھے لحد میں اتارنے والے ہاتھ اس کے ہوں۔۔۔۔
میری لحد پہ مٹی سب سے پہلے وہ ڈالے۔۔۔۔۔۔
مجھے وہ مل گیا ہے۔۔۔۔۔
لیکن۔۔۔۔۔
زندگی دھوکہ دینے والی ہے۔۔۔۔
مجھے اس کے ساتھ ان سب لمحوں کو جینا ہے۔۔۔۔۔
پلیز۔۔۔۔۔
مجھے اب مرنا نہیں۔۔۔۔۔بس اس کے ساتھ کے چند دن چاہیے مجھے۔۔۔۔۔۔
میں چاہتی ہوں جب وہ مجھے دفنائے تو اپنی چادر میرے مردہ وجود پہ اوڑھا دے۔۔۔۔۔۔
پلیز بس اتنی سی مہلت۔۔۔۔۔


محمل



Post a Comment

0 Comments