Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Kbi Khud Se Bhi Mil Kr Dekho by Fliza Arshad

Kbi Khud Se Bhi Mil Kr Dekho by Fliza Arshad

Urdu poetry is an ancient tradition. It has many different types. It is considered as an important element of our culture. It is a best way to express feelings of love, pain,anxiety and suffocation.
A poet interprets his inner feelings and condition through his words.

کبھی خود سے بھی مل کر دیکھو

کبھی خود سے بھی مل کر دیکھو
کچھ دیر اپنے لٸیے جی کر دیکھو
سنوار کے خود کو بہت سا
آٸنے میں اپنا عکس دیکھو
بہت رولٸیے دوسروں کےلٸے
اب خود کے لٸے مسکرا کے دیکھو
اپنے غرض کے لٸیے بڑھاتے ہیں جو ہاتھ
کبھی وہ ہاتھ جھٹک کر بھی دیکھو
یہ دنیا نہیں رکھتی یاد کسی کے خلوص کو
نہیں آتا یقین تو آزما کر دیکھو
اب تک نبھاٸی ہے جس سے دوستی فلزہ
آج ان سے دشمنی مول کے تو دیکھو

    فلزہ ارشد


Post a comment

0 Comments