Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Woh Jo Ek Mein Thi by Nagina Basharat

Woh Jo Ek Mein Thi by Nagina Basharat

Urdu poetry is an ancient tradition. It has many different types. It is considered as an important element of our culture. It is a best way to express feelings of love, pain,anxiety and suffocation.
A poet interprets his inner feelings and condition through his words.

وہ جو اِک میں تھی

ہمارا تزکرہ چھوڑو
جو چھیڑو گے پُرانی دُھن
بہت سے ساز نکلے گے
پُرانی بوسیدہ دیواروں کے
دَرودیوار لَرزیں گے
دڑاڑیں اور گہری ہو کر
غمِ ہستی سُنای گی
کہی صدیوں سے
لاشہ جو اُٹھاے گھومتے ہیں ہم
اُسے چابُک نہ دو ایسی
کہہ
پیمانہ صبر کا چھلکا
تو !! ہنسنا بھول جاو گے
یہ جادو ہے،طلسم ہے
یا خود پہ برف ہے طاری
کہہ!
لب کو بھینچ رکھا ہے
طلب کو مار ڈالا ہے۔
وجودِذات کرچی ہے
زمانہ بھول بیٹھے ہیں
خودی کو ہار بیٹھے ہیں
پرانی دُھن کو مت چھیڑو
ہمارا تزکرہ چھوڑو
ہم وہ خاموش ہستی ہیں
جنھیں
سزایں کچھ نہیں کہتی
سدایں مار دیتی ہیں۔

 ازقلم نگینہ بشارت

Post a comment

0 Comments