Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Lustre of love By Sadia Yaqoob EBook

Lustre of love By Sadia Yaqoob EBook


Lustre of love By Sadia Yaqoob EBook

Sadia Yaqoob EBook
Fantasy based
Cousin forced marriage romantic
Pre Booking Start
dispatch Date Eid 3rd day
After Discount Available Price/300

کہاں پھسا دیا ہے ماما نے مجھے ۔۔۔۔ اور میں بھی پاگل جو  بال کھلے چھوڑ بیٹھی ۔۔۔۔ وہ سیڑھیوں کے پاس کھڑی خود کو کوس رہی تھی ۔۔۔۔۔

جب افروز وہاں آیا ۔۔۔۔۔ اور چپ چاپ اسکے پیچھے کھڑا ہو گیا ۔۔۔۔۔

Yes you are right ..... You are mad ....

تم ۔۔۔۔ تم پھر آ گئے ۔۔۔ تم کیوں بار بار مجھ سے لڑنے پہنچ جاتے ہو ۔۔۔۔ جاؤ معاف کرو میں اس وقت تم سے نہیں لڑنا چاہتی ۔۔۔۔۔ وہ غصے سے اسکی طرف پلٹی ۔۔۔۔۔ افروز اسکو دیکھتا ہی رہ گیا۔۔۔۔

وہ اسے پہلی بار اس حلیے میں دیکھ رہا تھا ۔۔۔۔ اسکے دماغ میں اسکا جو عکس بن چکا تھا وہ آج اس سے بہت مختلف نظر آ رہی تھی ۔۔۔۔۔ وہ اتنی خوبصورت لگ رہی تھی کہ دیکھنے والے کی نظریں اس پر ٹھہر جاتی تھیں ۔۔۔.  اور یہی افروز کے ساتھ ہوا تھا ۔۔۔۔۔

I don't want to see you ....

 وہ اسکے سحر سے نکل چکا تھا ۔۔۔۔ اور اسے زبردستی اسکے ساتھ شادی والی بات یاد آ گئی تھی جو اسے غصہ دلا گئی تھی ۔۔۔۔

تو تم سے کس نے کہا ہے کہ مجھے دیکھو ۔۔۔۔ جاؤ یہاں سے ۔۔۔ میں پہلے ہی بڑی مشکل میں ہوں ۔۔۔۔۔ اوپر سے تم آ گئے ۔۔۔۔۔ وہ کہتے ہوئے اپنے بال اپنے چہرے سے ہٹانے لگی ۔۔۔۔۔

افروز کچھ پل چپ چاپ اسے دیکھتا رہا ۔۔۔۔۔ پھر پتا نہیں اسکے  دل میں کیا آئی جو اس نے  عجوہ کے بال اسکے چہرے سے ہٹائے ۔۔۔۔ عجوہ  فورا اس سے دور  ہوئی ۔

یہ کیا کر رہے ہو ۔۔۔۔۔ عجوہ نے اسے گھورا۔

ابھی بتاتا ہوں ۔۔۔۔ افروز نے اسکے دونوں ہاتھ پکڑتے ہوئے اسکے ہاتھوں پر لگی مہندی بےدردی سے مٹا دی ۔۔۔۔۔

I hate you .... I hate you from  deep of my heart ....

 وہ کہہ کر تن فن کرتا ہوا وہاں سے چل دیا ۔۔۔۔۔۔

 میں بھی تم سے نفرت کرتی ہوں ۔۔۔۔۔ وہ چیخی تھی ۔۔۔ اسکے آواز پر افروز کے قدم پل بھر کے لیے رکے تھے ۔۔۔۔۔ پھر وہ اپنا سر جھٹکتے ہوئے چل پڑا تھا ۔۔۔۔

گھٹیا انسان ۔۔۔۔ اللہ پوچھے تمہیں ۔۔۔۔۔ وہ روتی ہوئی اپنے کمرے کی طرف بڑھ گئی تاکہ اپنے ہاتھ دھو سکے ۔۔۔۔۔

To order this ebooks
jazz cash
easypaisa
👇👇👇
03357500595


0

Post a Comment

1 Comments