Breaking News

6/recent/ticker-posts

Header Ads Widget

Shart E Ulfat Novel By Aan Fatima Episode 19

Shart E Ulfat Novel By Aan Fatima Episode 19

Shart E Ulfat Novel By Aan Fatima Episode 19

Novel : Shart E Ulfat
Writer Name : Aan Fatima
Category : Kitab Nagri Special

"آپ مناہل آپی کا نہیں ہوچھیں گی۔"

اس نے اپنی تمام ہمت متجمع کرتے کمزور لہجے میں انہیں مخاطب کیا تو اس کے نام پہ ہی ان کے چہرے پہ کرختگی چھاگئی۔

"نہیں۔"

انہوں نے مختصر جواب دیا۔

"آپ کو پوچھنا پڑے گا کیونکہ ابھی ہی آپ نے کہا کہ معاف کردینے سے ہماری ہی عزت میں اضافہ ہوتا ہے نہ تو انہوں نے بھی مجھ سے رو رو کر التجا کی ہے میں کیسے ان کی باتوں کو ان کی معافی کو ٹھکرادوں بوا۔"

وہ بھی جواباً سرد لہجے میں گویا ہوئی۔جتنا وہ ان جھمیلوں سے خود کو پرسکون کرنا چاہتی تھی۔اتنا ہی ایک نئی تکلیف اس کی راہ تک رہی ہوتی تھی۔

"لیکن منسا ایسے لوگوں کی فطرت کبھی نہیں بدلتی۔"

انہوں نے ایک کمزور سی دلیل پیش کی تھی۔منسا کا سر بےاختیار نفی میں ہلا تھا۔

"بوا ہم انہیں لوگوں میں کیوں شمار کریں۔خیر چلیں ایک آخری بات کرتی ہوں وہ بھی تو اسی باپ کی اولاد ہے نہ جسے میں نے معاف کیا ان کے رویے کی بدولت۔جہاں تک میں جانتی ہوں جب ماما کا نکاح ان سے ہوا تھا مناہل آپی چھوٹی تھی۔ایک بچہ اس عمر میں بلکل یہ بات نہیں سمجھ سکتا جو وہ اس عمر میں ماما کے خلاف کرجایا کرتی تھی ان کے دماغ میں یہ باتیں ڈالی جاتی تھی تبھی وہ ذہر اگلتی تھی۔بچے اپنے گھروں میں جو دیکھتے پرکھتے ہیں اسی پہ عمل کرتے ہیں اور جانے انجانے میں ہی سہی دوسروں کی دل آذاری کا ذریعہ بن جاتے ہیں پھر جوں ہی وہ بڑھتے جاتے ہیں ان کی یہ عادت پختہ ہوجاتی ہے اور وہ اچھے برے کا فرق بھلا چکے ہوتے ہی یا یوں کہوں کہ بچے اپنے ماں باپ کا ہی عکس ہوتے ہیں۔مجھے یہ کہنے میں کوئی عار نہیں ہے کہ پاپا نے آپی کی پرورش میں بہت کوتاہیاں کی ہے اور آج وہ جس حال میں ہیں وہ صرف اور صرف انہی کی بدولت ہے۔قصوروار وہ اکیلی نہیں بلکہ وہ دونوں ہیں تو پھر میں کیوں ایک کے ساتھ درگزر سے کام لے کر دوسرے کے ساتھ ناانصافی کروں انصاف کرنا بھی تو اس پاک ذات کی ہی صفت ہے نہ تو میں کیوں اس صفت سے منہ موڑوں۔اگر پاپا سمجھ جائیں تو ٹھیک نہیں سمجھیں گے تو میں خود ہی سمجھالوں گی۔انہیں آپی کے ساتھ ویسا ہی رویہ دوبارہ اختیار کرنا ہوگا۔"

وہ مضبوط اور پرعزم لہجے میں بولی تھی۔بوا اس کی بات پہ اسے دیکھتی رہ گئی۔وہ اتنی بڑی ہوگئی تھی کہ یہ بات انہیں اچھے سے سمجھاگئی تھی معاً تالیوں کی آواز پہ منسا نے دھڑکتے دل سمیت جھٹکے سے رخ موڑا تھا جہاں دروازے پہ ایستادہ لائبہ اور عرشمان کو دیکھتے اس کا دل بےساختہ ڈوب کر ابھرا تھا کہ کہی وہ اسے غلط نہ گردانے۔

Kitab Nagri start a journey for all social media writers to publish their writes.Welcome To All Writers,Test your writing abilities.
They write romantic novels,forced marriage,hero police officer based urdu novel,very romantic urdu novels,full romantic urdu novel,urdu novels,best romantic urdu novels,full hot romantic urdu novels,famous urdu novel,romantic urdu novels list,romantic urdu novels of all times,best urdu romantic novels.
Shart E Ulfat Novel By Aan Fatima Episode 19 is available here to download in pdf form and online reading.
Click on the link given below to Free download Pdf
Free Download Link
Click on download
give your feedback

ان سب ویب،بلاگ،یوٹیوب چینل اور ایپ والوں کو تنبیہ کی جاتی ہےکہ اس ناول کو چوری کر کے پوسٹ کرنے سے باز رہیں ورنہ ادارہ کتاب نگری اور رائیٹرز ان کے خلاف ہر طرح کی قانونی کاروائی کرنے کے مجاز ہونگے۔

Copyright reserved by Kitab Nagri

ناول پڑھنے کے لیے نیچے دیئے گئےامیجز پرکلک کریں 👇👇👇
















































پچھلی اقساط پڑھنے کے لیے نیچے دئیے لنک پر کلک کریں 👇👇👇





5th Episode Link



ناول پڑھنے کے بعد ویب کومنٹ بوکس میں اپنا تبصرہ پوسٹ کریں اور بتائیے آپ کو ناول
 کیسا لگا ۔ شکریہ

Post a Comment

4 Comments

  1. Kamal ast������bhtt khoob likh rhi hain ap pyari writer..khush rhy..laiba or minsa ki friendship kamal...basim ki nok jhok..arshaman all in one polite humble attitude everything he hass..he is the real gem��i love your writing style..ek ek scene perfect hota h...minsa ki bua se baty ek ek word dil ko choo gya coz aisa e real me hota h...phle me chahti thi k minahil ko sakht saza mile lekin ab minsa ki bato se andaza hua k qasoor us ka nahi tha..��halat e aise paida ho gye thy k woh burai ki daldal me phnsti chli gai��anyways episode was super duper hit..or plzz plzz writer ji arsh k sath kch mat kijiye ga..me us k sath kch bura hoty nahi dekh skti..��

    ReplyDelete
  2. Mai n kabhi review nai diya is liye mazrat or Dena b nai ata lakin Koshish zaroor karoo gi
    First of all Mai novel jab end par a jata hai tab parhti hu kuk wait hi nai hota epi ka lakin Mai n sab episode parhi or meraypas alfaz hi nai hai itna Kamal ka novel or writing style I am totally shocked. Your writing style is very mature lagta hi nai hai k ap n abhi shuroo kiye novel likhnay Mai n ap k phlay do novels b parhay hai sab bht Kamal k thy 💕💕💕
    Ab review deti chlo to sab se phlay atay hai friendship ki taraf beshk achy dost Khuda ki taraf se nemat hotay hai or aik acha dost ap ki zindagi sanwar deta hai laiba or Minsa ki dosti Kamal ki thi laiba n hr tarah se Minsa ko support kiya mentally b. Or bua ka character bht Kamal ka tha beshk aik bazurg Jo batay ap ko smja skta hai wo koi or nai smjha skta.
    Achi tabiyat krnay Mai maa baap ka bht kirdar hota hai or hussaib Sahab n is Mai bht sari kutahiya ki jis ki waja se minahil itni khudparat ho gai or apnay buray anjam ko phnchi
    Arham ka character b bht loving character Raha hai or wo waqt par hi minahil se bch gya
    Basim ka character b bht AchA tha zindagi Mai nok jhok b honi chahiye
    Or atay hai hmaray hero and heroin ki taraf to Minsa Jo k aik baap ki muhabbt ki thukrai larki lakin sabar ka Daman hath se na janay diya or bshk sabar ka phal usay arshman ki shakal Mai mila bshk aik acha hmsafar ho to ap k zindagi purskoon guzarti hai he is a very kind, caring and loving husband and also a loving and caring brother and son.and last plzzz end acha ki jiye ga kuk k arshman hi novel ki Jan hai💖💖🌸💝
    Last Allah ap ko bht so kamyabiyo se nawaze or aise hi ap hmaray liye achay achay novels likhti rahay.👏👏

    ReplyDelete
    Replies
    1. Boht boht shukriya pyari❤❤❤
      Khush rhy jeeti rhy��❤

      Delete
  3. Kia tareef karu alfaz nai sepcheeless pleas pleas urshman ko kuch Na how please fatima g please n episode jaldi please please please please please please please please

    ReplyDelete